میانمار

میانمار میں فوجی بغاوت کے خلاف ایک مظاہرہ۔
Unsplash/Pyae Sone Htun

میانمار کے فوجی حکمرانوں کو تسلیم نہ کریں، ماہر انسانی حقوق

میانمار میں انسانی حقوق کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے اقوام متحدہ کے متعین کردہ غیرجانبدار ماہر نے کہا ہےکہ عالمی برادری ملک کی فوجی حکومت کو قانونی تسلیم کرنے سے انکار کرے۔

آئی او ایم نئے آنے والے روہنگیا مہاجرین کو طبی امداد فراہم کر رہا ہے۔
IOM

آئی او ایم نے جنوب مشرقی ایشیا میں روہنگیا مہاجرین کی مدد تیز کر دی

عالمی ادارہ برائے مہاجرین (آئی او ایم) نے بتایا ہے کہ روہنگیا پناہ گزینوں کی بڑھتی ہوئی تعداد سمندر اور خشکی کے راستے جنوب مشرقی ایشیائی ممالک میں آ رہی ہے۔ ادارے نے خطے میں روہنگیا پناہ گزینوں کی مدد کے لیے اپنی کوششوں میں اضافہ کر دیا ہے۔

میانمار میں فوجی بغاوت کے خلاف لوگ سراپا احتجاج ہیں۔
© Unsplash/Saw Wunna

انسانی حقوق کی بگڑی صورتحال میں میانمار کا بحران بڑھ رہا ہے، ترک کا انتباہ

اقوام متحدہ میں انسانی حقوق کے دفتر نے کہا ہے کہ میانمار میں منتخب جمہوری حکومت کے خلاف ظالمانہ فوجی بغاوت سے قریباً دو سال بعد ملک مزید بحران کا شکار ہو گیا ہے اور بڑے پیمانے پر انسانی حقوق سلب کیے جا رہے ہیں۔

حالیہ دنوں میں سری لنکا اور انڈونیشیا نے سمندر میں پھنسے روہنگیا پناہ گزینوں کو بحفاظت ساحل تک پہنچایا۔
© UNICEF/Patrick Brown

سمندروں میں بھٹکتے روہنگیا افراد کے تحفظ کے لیے مربوط کوششوں کی ضرورت

اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق وولکر تُرک نے محفوظ پناہ کے لیے جان کا خطرہ مول لے کر خطرناک سمندری سفر اختیار کرنے والے ہزاروں بے آسرا روہنگیا باشندوں کو تحفظ دینے کے لیے علاقائی سطح پر مربوط طریق کار وضع کرنے کے لیے کہا ہے۔

روہنگیا مہاجرین خلیج بنگال کے راستے بنگلہ دیش کے علاقے کاکس بازار پہنچ رہے ہیں۔
© UNICEF/Patrick Brown

بحیرہِ انڈیمان میں پھنسے 190 افراد کو بچانے کی اپیل

بحیرہ انڈیمان اور خلیج بنگال کے درمیان 190 لوگ ایک کشتی پر بھٹک رہے ہیں جنہیں بچانے اور بحفاظت ساحل پر لانے کے لیے کوئی کوشش نہیں کی گئی۔ اطلاعات کے مطابق اس کشتی پر 20 لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔

میانمار میں فوجی بغاوت کے خلاف واشنگٹن میں وائٹ ہاؤس کے سامنے مظاہرین اکٹھے ہیں۔
Unsplash/Gayatri Malhotra

میانمار میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر سلامتی کونسل کی قرارداد ’کمزور‘

میانمار کے لیے اقوام متحدہ کے مقرر کردہ انسانی حقوق کے ایک غیرجانبدار ماہر نے خبردار کیا ہے کہ اگر رکن ممالک نے ''مضبوط اور مربوط قدم'' نہ اٹھایا تو ملک میں خونریزی بدترین صورت اختیار کر جائے گی۔

اطلاعات کے مطابق 18 دسمبر کو قریباً 105 روہنگیا پناہ گزین سری لنکا کے شمالی علاقے سے قریب سمندر میں ایک کشتی پر بے یارومددگار موجود تھے (فائل فوٹو)۔
© UNHCR/Christophe Archambault

روہنگیا پناہ گزینوں کی کشتی بحفاظت ساحل پہنچانے پر سری لنکا کی ستائش

پناہ گزینوں سے متعلق اقوام متحدہ کے ادارے 'یو این ایچ سی آر' نے ایک مصیبت زدہ کشتی میں سوار روہنگیا پناہ گزینوں کو بچانے اور انہیں بحفاظت ساحل پر لانے کے لیے سری لنکا کے مقامی مچھیروں اور بحری فوج کے فوری اقدامات پر ان کی ستائش کی ہے۔

مظاہرین واشگنٹن میں احتجاج کرتے ہوئے میانمار میں تشدد کے خاتمے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔
Unsplash/Gayatri Malhotra

میانمار میں خفیہ فوجی عدالتوں نے بیسیوں افراد کو سزائے موت سنائی

میانمار میں گزشتہ برس ہونے والی فوجی بغاوت سے اب تک فوجی عدالتیں پس پردہ 130 سے زیادہ لوگوں کو موت کی سزا دے چکی ہیں۔ یہ بات اقوام متحدہ میں انسانی حقوق کے شعبے کے سربراہ نے اس ہفتے وہاں سزاؤں کے تازہ ترین اعلان کے بعد کہی ہے۔