انسانی کہانیاں عالمی تناظر
روانڈا میں تتسی افراد کی نسل کُشی کے متاثرین کی یاد میں شمعیں روشن کی جا رہی ہیں (فائل فوٹو)۔

جانیے کہ نسل کشی پر اقوام متحدہ کا کنونشن کیا ہے؟

UN Photo/Violaine Martin
روانڈا میں تتسی افراد کی نسل کُشی کے متاثرین کی یاد میں شمعیں روشن کی جا رہی ہیں (فائل فوٹو)۔

جانیے کہ نسل کشی پر اقوام متحدہ کا کنونشن کیا ہے؟

جرائم کی روک تھام اور قانون

جنوبی افریقہ نے زیر محاصرہ غزہ کی پٹی میں 23 لاکھ فلسطینیوں کو درپیش حالات کی بنیاد پر اسرائیل کے خلاف عالمی عدالت انصاف (آئی سی جے) میں مقدمہ دائر کیا ہے۔ اس میں اسرائیل پر انسداد دہشت گردی کے عالمی کنونشن کی خلاف ورزی کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

جنوبی افریقہ نے نیدرلینڈز کے شہر دی ہیگ میں قائم عدالت میں یہ دعویٰ 29 دسمبر کو دائر کیا تھا۔ اس میں کہا گیا ہے کہ 7 اکتوبر کے بعد اسرائیل فلسطینیوں کی نسل کشی کو روکنے اور اس کی ہدایات و ترغیب پر قانونی کارروائی میں ناکام رہا۔

اس صورت حال میں یہ سوال ابھرتا ہے کہ انسداد نسل کشی کا کنونشن کیا ہے؟

نومولود بچوں کو غزہ کے الشفاء ہسپتال سے کسی محفوظ مقام پر منتقل کرنے کی تیاری کی جا رہی ہے (فائل فوٹو)۔
© UNICEF/Eyad El Baba
نومولود بچوں کو غزہ کے الشفاء ہسپتال سے کسی محفوظ مقام پر منتقل کرنے کی تیاری کی جا رہی ہے (فائل فوٹو)۔

کنونشن کی بنیاد 

نسل کشی کے جرم کی روک تھام اور اس کا ارتکاب کرنے والوں کے لیے سزا سے متعلق 1948 کا کنونشن اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی جانب سے انسانی حقوق کے بارے میں منظور کیا جانے والا پہلا معاہدہ تھا۔ اس کی منظوری دوسری جنگ عظیم کے بعد دی گئی جب یورپ میں وسیع پیمانے پر یہودیوں کے قتل کے واقعات (ہولوکاسٹ) پیش آئے تھے۔ اس دوران نازی جرمنی نے 60 لاکھ سے زیادہ یہودیوں کا منظم طریقے سے قتل عام کیا۔ 

انسداد نسل کشی کا کنونشن عالمی برادری کے اس عزم کا اظہار ہے کہ نسل کشی کے جرائم کا اعادہ نہیں ہو گا۔ تاہم ایسے واقعات کا مکمل طور سے قلع قمع نہیں ہو سکا۔ 1994 میں روانڈا اور 1995 میں سربرنیکا کا قتل عام اس کی نمایاں مثال ہیں۔ 

19 دفعات پر مشتمل یہ کنونشن 'نسل کشی' کی پہلی قانونی تعریف متعین کرتا ہے۔ یہ نسل کشی کے جرم کی روک تھام اور اس پر سزا کے حوالے سے کنونشن کی توثیق کرنے والے ممالک کی ذمہ داریاں بھی واضح کرتا ہے۔ ایسے ممالک کی تعداد 153 ہے۔

تتسی نسل کشی میں اپنے والدین کھو دینے والے بچے روانڈا کے ایک کیمپ میں اکٹھے ہیں۔
UN Photo/John Isaac
تتسی نسل کشی میں اپنے والدین کھو دینے والے بچے روانڈا کے ایک کیمپ میں اکٹھے ہیں۔

'نسل کشی' کیا ہے؟

کنونشن کی دفعہ 2 کے مطابق نسل کشی کا مطلب کسی قومی، نسلی یا مذہبی گروہ کو مکمل یا جزوی طور پر ختم کرنے کے ارادے سے ذیل میں درج کسی فعل کا ارتکاب ہے: 

الف۔ کسی گروہ کے ارکان کا قتل 

ب۔ کسی گروہ کے ارکان کو سنگین جسمانی یا ذہنی نقصان پہنچانا

ج۔ کسی گروہ کو دانستہ طور پر ایسے حالات میں رہنے پر مجبور کرنا جس کا مقصد اس کا جزوی یا کلی طور پر جسمانی خاتمہ کرنا ہو

د۔ کسی گروہ کو بچوں کی پیدائش سے روکنے کے اقدامات کا نشانہ بنانا 

ر۔ کسی گروہ سے تعلق رکھنے والے بچوں کی جبراً دوسرے گروہ کو منتقلی

ایک خاتون سربرنیکا نسل کشی میں ہلاک ہونے والے اپنے شوہر، بیٹے، اور دو بھائیوں کی تصویریں دکھا رہی ہیں۔
UN News/Hisae Kawamori
ایک خاتون سربرنیکا نسل کشی میں ہلاک ہونے والے اپنے شوہر، بیٹے، اور دو بھائیوں کی تصویریں دکھا رہی ہیں۔

کون سے اقدامات قابل سزا ہیں؟

کنونشن کی دفعہ 3 کے مطابق درج ذیل اقدامات قابل سزا ہیں: 

الف۔ نسل کشی 

ب۔ نسل کشی کے ارتکاب کی سازش

ج۔ نسل کشی کی براہ راست یا لوگوں کے ذریعے ترغیب

د۔ نسل کشی کے ارتکاب کی کوشش

ر۔ نسل کشی کے عمل میں شرکت

کیا کسی کو نسل کشی کے جرم پر قانونی کارروائی سے استثنیٰ حاصل ہے؟ 

نہیں 

کسی کو نسل کشی کے جرم سے استثنیٰ حاصل نہیں ہے۔ کنونشن کے تحت نسل کشی یا دفعہ 3 میں درج کسی بھی دیگر فعل کا مرتکب ہونے والے کو سزا دی جانا ضروری ہے خواہ وہ آئینی حکمران ہوں، سرکاری عہدیدار یا عام لوگ۔

جنوبی افریقہ کے نمائندہ عالمی عدالت انصاف میں اسرائیل کے خلاف ’نسل کشی‘ کے الزامات کی تفصیلات بتا رہے ہیں۔
ICJ-CIJ/ Frank van Beek
جنوبی افریقہ کے نمائندہ عالمی عدالت انصاف میں اسرائیل کے خلاف ’نسل کشی‘ کے الزامات کی تفصیلات بتا رہے ہیں۔

قانونی کارروائی کہاں ہوتی ہے؟

ایسے جرائم میں ملوث ملزموں کے خلاف قانونی کارروائی اس ملک کی سرزمین پر مجاز عدالت میں ہوتی ہے جہاں ان جرائم کا ارتکاب ہوا ہو۔

ملزموں پر جرائم کی عالمی عدالت میں بھی مقدمہ چلایا جا سکتا ہے جس کا دائرہ اختیار ہر اس فریق کا احاطہ کرتا ہے جس نے اس اختیار کو تسلیم کیا ہو۔

'آئی سی جے' ایسی ہی عدالت ہے۔ 

عالمی عدالت انصاف (آئی سی جے) کا کردار کیا ہے؟

'آئی سی جے' ممالک کے مابین تنازعات کا تصفیہ کرتی ہے۔ اسرائیل کے خلاف جنوبی افریقہ کے مقدمے میں انسداد نسل کشی کے کنونشن کی پامالی کے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔

نسل کشی کے حوالے سے ذمہ داریوں کی خلاف ورزی یا کنونشن کے آرٹیکل 3 میں درج کسی بھی اقدام کے ارتکاب سے متعلق کوئی بھی مقدمہ اس عدالت میں لایا جا سکتا ہے۔ 

یہاں 'آئی سی جے' سے متعلق حقائق نامے میں مزید تفصیلات جانیے۔

نیدرلینڈ کے شہر ہیگ میں عالمی عدالت انصاف غزہ پر جنوبی افریقہ بنام اسرائیل مقدمے کی سماعت کر رہی ہے۔
ICJ-CIJ/ Frank van Beek
نیدرلینڈ کے شہر ہیگ میں عالمی عدالت انصاف غزہ پر جنوبی افریقہ بنام اسرائیل مقدمے کی سماعت کر رہی ہے۔

نسل کشی کے متاثرین کا عالمی دن

اقوام متحدہ میں نسل کشی کی روک تھام اور لوگوں کے تحفظ کی ذمہ داری سے متعلق دفتر ہر سال 9 دسمبر کو اس کنونشن  کی منظوری کی سال گرہ مناتا ہے۔ اس کا مقصد انسانی حقوق کے عالمی اعلامیے کی منظوری کے دن سے ایک روز قبل بین الاقوامی برادری کی جانب سے کیے جانے والے ایک اہم عزم کی یاد دہانی ہے۔ 

اس دن کو نسل کشی کے جرائم کے متاثرین کی یاد، ان کی تکریم اوراس جرم کی روک تھام کا عالمی دن بھی کہا جاتا ہے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتیرش نے کنونشن اور اس کے دائمی پیغام کو دنیا میں ابدی طاقت کے طور پر قائم رکھنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ ایسی قوت ہونی چاہیے جو سب کو اس کنونشن کے تحت کیے گئے وعدے کا پاس کرنے کی ترغیب دے اور اس کی بدولت نسل کشی کے ذمہ داروں کا احتساب یقینی بنایا جائے۔